پاکستان کی رواں سال ایک اور سیریز طے،ون ڈے کرکٹ کی نصف صدی بھی مکمل

ایک طرف پاکستان کرکٹ ٹیم کی کارکردگی پر تنقید جاری ہے اور خوب جاری ہے،دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ اس نئے سال میں بے انتہامصروفیات کے باوجود مزید سیریز شیڈول کر رہا ہے۔کرکٹ آئرلینڈ نے دعویٰ کیا ہے کہ اس سال پاکستان کے خلاف ٹی 20 سیریز قریب حتمی مراحل میں داخل ہےلیکن آپ کو یہ جان کر حیت ہوگی کہ یہ سیریز نہ پاکستان میں ہوگی اور نہ ہی آئرلینڈ میں بلکہ تیسرے ملک میں کھیلی جائے گی ۔

واقعہ یہ ہے کہ یہ سال ٹی20 ورلڈ کپ کا ہے،اس سال کے آخر میں بھارت اس کی میزبانی کرے گا۔اس لئے تما م ٹیمیں اس کی تیاری کے لئےاپنے شیڈول فائنل کر رہی ہیں۔پاکستان جس نے گزشتہ سال انگلینڈ کے ساتھ اسکاٹ لینڈ اور آئر لینڈکا دورہ کرنا تھا،کوروناکی وجہ سے وہ صرف انگلینڈ ہی جاسکا تھا،باقی سیریز ملتوی کردی گئی تھیں۔کرکٹ آئرلینڈ وہی سیریز اس سال شیڈول کرنے کی کوشش میں ہے اور اہم بات یہ ہے کہ آئرلینڈ اس سیریز کو انگلینڈ کی سرزمین پر شیڈول کرنا چاہتا ہے اور اس کے لئے بات چیت جاری ہے۔

آئر لینڈ نے گزشتہ سال بنگلہ دیش کے خلاف ہوم سیریز کے میچز انگلینڈ میں کھیلنے تھے لیکن یہ سیریز بھی کوروناکی نذر ہوگئی تھی۔پاکستان نے اس سال انگلینڈ میں محدود اوورز فارمیٹ کی سیریز کھیلنے جانا ہے،آئرلینڈ اس سے قبل پاکستان کے خلاف 2 ٹی 20میچزکی سیریز انگلینڈ میں کھیلے گا۔پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے اس کی رسمی منظوری دی جاچکی ہے۔

دوسری جانب ایک روزہ کرکٹ کا حسن اب بھی برقرار ہےلیکن اب اس کے میچز کے زیادہ ہونے کا انحصار ورلڈ کپ پر ہوتا ہے،ابھی جیسے یہ سال ٹی20 ورلڈ کپ کا ہے تو ہر ٹیم اگلے 8 ماہ میں زیادہ سے ٹی 20 میچز کھیلتی دکھائی دے گی۔بہت کم لوگوں کو علم ہوگا کہ گزشتہ روز کا جو دن گزرا ہے وہ ایک روزہ انٹرنیشنل آفیشل کرکٹ کی نصف صدی مکمل ہونے کا دن تھا۔

دنیائے کرکٹ میں پہلا آفیشل ایک روزہ میچ 5جنوری 1971کو میلبورن میں آسٹریلیا اور انگلینڈ کے مابین کھیلا گیا تھا۔40 اووز کے میچ میں فی اوور 8بالزکا تھا،انگلینڈ میں اس کا تجربہ 1966میں کیا جاچکا تھا لیکن وہ ایک غیر سرکاری میچ تھا۔50 سال مکمل ہونے پر اگر ون ڈے کرکٹ کی تاریخ پر نگاہ ڈالی جائے تو اب تک 4ہزار سے زائد ایک روزہ انٹرنیشنل میچز کھیلے جاچکے ہیں۔

میلبورن میں آسٹریلیا اور انگلینڈکا ٹیسٹ میچ بارش کی نذر ہوگیا تھا،کم وقت کی وجہ سے یہ میچ کروایا گیا تھا،دونوں ٹیموں نے اسے ہنستے کھیلتے کھیل لیا،دونوں ممالک نہیں جانتے تھے کہ یہ آگے جاکر ایک مستقل بڑا فارمیٹ بن جائے گا،ایسا فارمیٹ کی جس کی کمائی سے اصل فارمیٹ ٹیسٹ کرکٹ کو زندہ رکھا جائے گا،50 سال قبل 5 جنوری کو آسٹریلیا نے 46 ہزار تماشائیوں کے سامنے یہ میچ جیت لیا تھا۔آج 50برس مکمل ہونے کے بعد انگلینڈ پہلی بار ورلڈ چیمپئن بنا ہے،اس نے یہ اعزاز گزشتہ سال حاصل کیاتھا۔

دنیائے کرکٹ میں اسی آئیڈیے کے تحت اب ٹی 20 اور ٹی 10 کے میچز کھیلے جارہے ہیں،ہر فارمیٹ کے میگا ایونٹس ہیں اور محدود اوورز کی کرکٹ پھل پھول رہی ہے ،لیگز عام ہیں،تیزکرکٹ کا یہ چشمہ 50 برس قبل میلبورن سے پھوٹا تھا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *