قائداعظم ٹرافی میں اہم کھلاڑی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پابندی کا شکار

قائداعظم  ٹرافی فرسٹ کلاس کرکٹ میں بہت بڑا ایونٹ ہے جس میں ٹوٹل 6  ٹیمز حصہ لیتی ہیں۔ قائداعظم ٹرافی کے رواں ٹیسٹ کرکٹ سیزن میں 23  میچ جوکہ دو بڑی ٹیمز نادرن اور سندھ کے درمیان میں کھیلا جا رہا تھا کھیل کے دوران ضابطہ اخلاق کی کلاف ورزی کرنے پر دو اہم کھلاڑی جرمانوں کی  میں آ گئے۔  دونوں کھلاڑیوں کو یہ جرمانہ مسلسل دوسری مرتبہ خلاف ورزی کرنے پر کیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق قائداعظم ٹرافی کے ٹیسٹ سیزن کے دوران  ایک میچ میں اسد شفیق مسلسل ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کر رہے تھے۔ جس پر ایمپیئر کی طرف سے میچ ریفری کو شکایت کی جس پر ریفری انھیں وارننگ دے کر کھیل جاری رکھنے کو کہا۔ جبکہ باز نہ آنے پر مسلسل خلاف ورزی پر میچ ریفری نے  انٹرنیشنل ٹیسٹ پلیئر اسد شفیق پر میچ کی 20 فیصد فیس کو بورڈ کے کھاتے میں جمع کرانے کی سزا عائد کر دی ۔ اور ساتھ میں وارننگ جاری کی کہ اگر انھوں نے غلطی دہرائی تو کرکٹ سے پابندی کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔ یاد رہے کہ اسد شفیق سندحھ کی ٹیم کی قیادت بھی کر رہے ہیں۔

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر  جرمانے کی سزا پانے والے دوسرے کھلاڑی شہزر محمد بھی سندھ کی طرف سے ٹیم کی نمائندگی کر رہے ہیں ۔ ذرائع کے مطابق شہزر محمد نے وکٹوں کے درمیان کیچ پکڑنے پر مخالف ٹیم کے کھلاڑی کو آوٹ دینے کی اپیل کی جس پر ایمپئر نے آؤٹ دینے سے انکار کیا تو شہزر نے ناخوشگواری کا اظہار کیا جس پر میچ ریفری نے ان پر میچ فیس کا 75  فیصد جرمانہ کر دیا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *