سابق بنگلہ دیشی کپتان مشفیق الرحیم کو دوران میچ ساتھی کھلاڑی پر ہاتھ اٹھانا مہنگا پڑ گیا

سابق بنگلہ دیشی کپتان اور وکٹ کیپر بیٹسمین مشفیق الرحیم کو دوران میچ ساتھی کھلاڑی  پر ہاتھ اٹھانا مہنگا پڑ گیا،بنگلہ دیشی کرکٹ بورڈ نے ایکشن لیتے ہوئے ان پر میچ فیس کا 25 فیصد جرمانہ عائد کردیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وکٹ کیپر بیٹسمین مشفیق الرحیم کو دوران میچ کیچ پکڑنے کے دوران ساتھی کھلاڑی پر غصے کے دوران ہاتھ اٹھانے پر بورڈ نے ایکشن لیتے ہوئے سزا سنادی ہے۔ٹی ٹوینٹی میچ کے دوران مشفیق آپے سے باہر ہوگئے تھے، جس کے بعد مشفیق الرحیم کو کرکٹ شائقین کی جانب سے سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا ،مشفیق الرحیم نے اپنے اس رویے پر معافی بھی مانگ لی ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹا گرام پر ان کا کہنا تھا کہ میں شائقین سے معافی مانگتا ہوں،میں اس واقعہ پر ساتھی کھلاڑی سے بھی معافی مانگ چکا ہوں۔میچ کے دوران میں نے جو کیا وہ کسی بھی طر ح قابل قبول نہیں،میں اللہ تعالی سے بھی اس پر معافی مانگتا ہوں۔میچ ریفری رقیب الرحسن کا کہنا ہے کہ ماضی میں ان کا ریکارڈ اچھا رہا ہے، انہیں وارننگ دیتے ہوئے بتادیا گیا ہے کہ آئندہ اس قسم کا طرز عمل ان کے لیے مشکلات کھڑی کرسکتا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.