پرویز مشرف کے ذاتی اکاؤنٹس میں کتنے ارب روپے ہیں اور عمران خان اس پر کیوں ہاتھ نہیں ڈال رہا ؟ نوازشریف نے تہلکہ مچا دینے والے پول کھول دیے

کوئٹہ(ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ ہماری تحریک کسی ادارے کیخلاف نہیں بلکہ چند کرداروں کیخلاف ہے،اسی لیے میں ان کرداروں کا نام لیتا ہوں تاکہ ان کی آئین شکنی کا الزام میرے اداروں اور فوج کی وردی پر نہ لگے،

ان کرداروں کو الیکشن 2018ء میں عوامی مینڈیٹ چوری کرنے اور مہنگائی،غربت،فاقہ کشی کا جواب دینا ہوگا۔انہوں نے کوئٹہ میں پی ڈی ایم کے جلسے سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ اتنا بڑا جلسہ دیکھ کر میرا یقین اور بھی پختہ ہوگیا ہے کہ انشاء اللہ ووٹ کی عزت کو اب کوئی پامال نہیں کرسکے گا، پامال کرنا تو دور ، اب میلی آنکھ سے بھی کوئی نہیں دیکھ سکے گا، گوجرانوالہ اور کراچی والا جذبہ آج کوئٹہ میں بھی دیکھ رہا ہوں۔انہوں نے کہا کہ وقت آگیا ہے ہم تقدیر بدلنے کیلئے اٹھ کھڑے ہوں، اللہ بھی ان کی مدد کرتا ہے جو اپنی مدد آپ کرتے ہیں، اللہ کا شکر ہے پاکستان کے عوام اپنی قسمت بدلنے کیلئے ایک ہی قافلے کا حصہ بن گئے ہیں۔مجھے آج حاصل بزنجو کی بڑی کمی محسوس ہورہی ہے۔وہ اپنے والد کی طرح ہرفورم پر جرات بہادری سے اپنا مئوقف پیش کرتے تھے۔ اللہ ان کو خاص رحمتوں سے نوازے۔ مجھے کل معلوم ہوا کہ محسن داوڑ اور ندیم اصغر کو کوئٹہ ایئرپورٹ پر سکیورٹی کے نا م پر گرفتار کیا گیا، نامعلوم جگہ پر منتقل کردیا گیا ہے۔ ہم سب اس عمل کی سختی سے مذمت کرتے ہیں، سکیورٹی کے نام پر اس طرح کے اقدامات ہماری ریاست کو پہلے بھی بدنام کرتے رہے ۔

حکومتی اقدامات پر افسوس ہے۔مری، بگٹی ، بزنجو اور دیگر قبائل کے ساتھ جو سلوک ہوتا رہا، اور ہورہا ہے، غداری کا لیبل ہر اس شخص کے ماتھے پر چسپاں کیا گیا، جس نے سر اٹھا کر بات کرنے کی کوشش کی، ظلم وستم کے خلاف احتجاج کیا، باغی اور غدار اس لیے قرار پائے کہ آئینی حقوق کیلئے آواز اٹھائی۔ گمشدہ افراد کا مسئلہ آج بھی ہے، ان آسمان کھا گیا یا زمین نگل گئی، کچھ پتا نہیں، کب تک یہ سب جاری رہے گا؟انہوں نے کہا کہ مجھے اچھی طرح اندازہ ہے کہ بلوچستان کے لوگ کس طرح کے مسائل کا شکار ہیں، پاکستان کے لوگوں کی زندگی کس طرح گزر رہی ہے، ان کو کس طرح کی مشکلات کا سامنا ہے۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.