معین علی نے ثقلین مشتاق کے بارے میں حیران کن بیان دے دیا

برطانوی آل رائونڈر معین علی کا کہنا ہے کہ ثقلین مشتاق سے بہتر سپن بولنگ کوچ میں نے آج تک نہیں دیکھا، سابق سپنر اس فن کے بارے میں بڑا علم رکھتے ہیں، مجھے بھی ان سے سیکھنے کا موقع ملا، مشتاق احمد اور اظہر محمود سے بھی دوستی ہے، دیگر پاکستانی کھلاڑیوں کے ساتھ بھی اچھا وقت گزارنے کا موقع ملا ہے، میری والدہ پاکستان میں پیدا ہوئی تھیں، بچپن میں وہاں جاتا رہا ہوں، خواہش ہے کہ خوبصورت ملک میں بھرپور سپر وتفریح کرتے ہوئے کئی مقامات دیکھوں۔
معین علی کا کہنا تھا کہ آئی پی ایل کے گذشتہ سیزن میں اچھی کارکردگی دکھائی تھی، اس بار زیادہ تر میچز باہر بیٹھ کر دیکھنے پر مایوسی ہوئی،میں سخت ٹریننگ جاری رکھے ہوئے ہوں، بہرحال نئے کوچز کی اپنی سوچ ہے،اس طرح کے معاملات ہوجاتے ہیں۔
انھوں نے کہا کہ میں ویرات کوہلی کو انڈر 19 کرکٹ کے دور سے جانتا ہوں،وہ حیران کن صلاحیتوں کے مالک کرکٹر ہیں،ان جیسے کھلاڑی کا کپتان اور اے بی ڈی ویلیئرز کا ساتھ میسر ہونا بڑا خوش آئند ہے۔

ایک اور سوال کے جواب میں معین علی کا کہنا تھا کہ کرکٹ کیریئر میں کبھی نسلی منافرت کا سامنا نہیں کرنا پڑا، ایشیائی نژاد ہونے کے باوجود مینجمنٹ نے آسٹریلیا کیخلاف میچ میں ٹی ٹونٹی ٹیم کی قیادت سونپی، ورلڈکپ میں شرکت کے بعد یہ میرے اور فیملی کیلئے ایک بہت بڑا اور قابل فخر موقع تھا، چند کرکٹرز کی شکایات سامنے آئی ہیں لیکن مجھے کبھی نسلی منافرت کا سامنا نہیں کرنا پڑا، میں نے ووسٹر شائر کی کپتانی

Sharing is caring!

Comments are closed.