انا للہ وانا الیہ راجعون : امت مسلمہ سوگ میں ڈوب گئی ، ہر آنکھ اشکبار ۔۔۔۔۔ نبی کریم ؐ کے حوالے سے بڑی سعادت رکھنے والی شخصیت انتقال کر گئی

مدینہ (ویب ڈیسک) روضہ رسول ﷺ کی دیکھ بھال اور صفائی ستھرائی کی سعادت بہت بڑی خوش نصیبی کی بات ہے، یہ سعادت دنیا کے صرف 4 افراد کو حاصل ہے، جن میں سے ایک احمد مسیبو گزشتہ روز انتقال کرگئے۔خانہ کعبہ کے کلیدبردار خاندان کی طرح روضہ رسولﷺ کی صفائی اور دیکھ بھال کی ذمہ داری بھی مخصوص

علاقے سے تعلق رکھنے والے افراد کے پاس ہے، ان محترم شخصیات کا تعلق حبشہ سے جا ملتا ہے،،جو گزشتہ 8 صدیوں سے روضہ رسول ﷺاورمسجد نبوی کی دیکھ بھال کی ذمہ داریوں کی سعادت سنبھالے ہوئے ہیں، روضہ رسول ﷺاور مسجد نبوی کے منبر کی چابیاں بھی اسی قبیلے کے افراد کے پاس ہیں۔ماضی میں متولی روضہ رسولﷺ کے فرائض میں 42 امور شامل تھے، لیکن اب ان کا کام صرف روضہ رسولﷺ پر آنے والی اہم شخصیات کا استقبال کرنا اور انہیں آب زمزم پیش کرنا ہے۔ روضہ رسولﷺکے متولین کی تعداد کسی دور میں ایک ہزارسے بھی زیادہ تک پہنچ گئی تھی جو اب کم ہو کر صرف چار تک رہ گئی ہے۔آخری چار متولین میں سے ایک احمد مسیبو بھی گزشتہ روز انتقال کرگئے، جن کی نماز جنازہ جمعہ کے روز نماز فجر کے بعدمسجد نبوی میں ادا کی گئی، باقی آخری تین متولین بھی عمر کے اس حصے میں ہیں جہاں کسی بھی وقت زندگی داغ مفارقت دے سکتی ہے۔ ان آخری خدام کے بعد اس ذمہ داری کو سنبھالنے والا اس نسل کا کوئی فرد باقی نہیں ہو گا۔ آخری چار متولین میں سے ایک احمد مسیبو بھی گزشتہ روز انتقال کرگئے، جن کی نماز جنازہ جمعہ کے روز نماز فجر کے بعدمسجد نبوی میں ادا کی گئی، باقی آخری تین متولین بھی عمر کے اس حصے میں ہیں جہاں کسی بھی وقت زندگی داغ مفارقت دے سکتی ہے۔ ان آخری خدام کے بعد اس ذمہ داری کو سنبھالنے والا اس نسل کا کوئی فرد باقی نہیں ہو گا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.