ہڈی ڈالو منہ بند کرواؤ پالیسی کام کر گئی ۔۔۔ جاوید میانداد نے الزامات لگانے کے بعد عمران خان سے بالآخر معافی کیوں مانگ لی؟ جانیے

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان کی موجودہ حکومت کیسے چلائی جا رہی ہے اور کتنی آسانی سے بلیک میل ہو جاتی ہے، اس کی تازہ ترین مثال سابق کپتان جاوید میانداد نے دی ہے جنہوں نے صرف ایک ویڈیو کر کے اپنی پسند کا سودا اس حکومت سے حاصل کر لیا ہے اور انکے مدح بیچارے شاید کبھی سمجھ بھی نہیں پائیں گے

کہ جاوید میانداد کو پہلے کیا ہوا تھا اور اب اچانک کیا ہوا ہے۔واقعہ کچھ یوں ہے کہ جاوید میانداد گذشتہ ہفتے اپنے یوٹیوب چینل پرآئے اور دھڑا دھڑ عمران خان کو چھکے اور چوکے لگانے لگے۔ یوں تو وہ اپنے دور میں سنگلز کی مشین سمجھے جاتے تھے اور ہمیشہ سے پاکستان کے نوجوان کھلاڑیوں کے ایک رن کے دو اور دو کے تین بنا کر مخالف ٹیم کو پریشر میں لانے کا پاٹ پڑھاتے رہے ہیں۔لیکن اس ویڈیو میں تو انہوں نے آؤ دیکھا نہ تاؤ اور بس لگے عمران خان کو سخت سست سنانے۔بولے کہ پاکستان میں ہر چیز کو تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ہے، انہیں حکومت کرنی نہیں آتی۔ اپنی ویڈیو میں جاوید میانداد نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ہر طرح سے ملک کا بیڑا غرق کر دیا ہے۔ کرکٹ کو ہم سوچتے تھے کہ یہ کچھ کریں گے لیکن انہوں نے تو بالکل ہی لٹیا ڈبو دی ہے۔ ہر جگہ پر ایسے لوگ لگائے ہوئے ہیں جنہیں کرکٹ کے متعلق کچھ نہیں پتہ۔ اپنی ایک پرانی پریس کانفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے جاوید میانداد نے کہاکہ عمران خان صاحب کو پہلے بھی سمجھایا تھا کہ کرکٹ میں محکموں کا کردار ختم نہ کرو، اس سے کھلاڑی بیروزگار ہو جائیں گے۔’میں نے آپ کو کہا تھا کہ آپ یہ نہ ختم کریں، آپ تو کسی کونوکری دےنہیں سکتے، جن کی لگی لگائی ہیں، انکی بھی چھین لیں گے اس اقدام کے ذریعے۔ اب دیکھ لیا نا کیا ہوا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ اچھے عہدوں کے لئے لوگوں کو باہر سے بلایا جاتا ہے جب کہ ملک کے اندر بہترین کھلاڑی موجود ہیں جو وہی کام کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب تک ملک کے اندر ایک کام کے لئے اپنا شہری موجود ہو جو کہ اس باہر سے آنیوالے آدمی سے بہتر طور پر وہی کام انجام دے سکتا ہو تو ایسی صورت میں باہر سے لوگوں کو بلانے کی کوئی گنجائش نہیں ہونی چاہیے۔اس ویڈیو میں جاوید میانداد نے فوجی ٹوپی پہن رکھی تھی اور انہوں نے کرکٹ اور کھیلوں پر بات کرتے کرتے اچانک افواجِ پاکستان کی تعریف کرنا شروع کر دی تھی اور کہا تھا کہ یہ تو فوج ہے جسکی وجہ سے پاکستان آج اکٹھا ہے ورنہ حکومت نے تو کوئی کسر نہیں چھوڑی اس ملک کو مشکلات میں ڈالنے میں۔ یہ ویڈیو انکے یوٹیوب چینل پر تو ہزاروں ویوز لائی ہی، اس نے سوشل میڈیا پر بھی ایک دو دن دھوم مچائے رکھی۔عمران خان کے مخالفین نے اس کو عمران خان کیخلاف عوامی غیض و غضب کی ایک شہادت کے طور پر پیش کیا تو ان کے حامیوں نے جاوید میانداد کو بھی آڑے ہاتھوں لیا۔ اسی دوران کچھ لوگ بیچارے ایسے بھی تھے جو پریشان تھے کہ آخر ہمارے سب کرکٹرز کو اچانک کیا ہو گیا ہے۔ پھر اچانک پتہ نہیں کیا ہوا کہ جاوید میانداد نے اپنے سابق کپتان عمران خان سے معافی مانگ لی اور کہا کہ ان کا دل صاف ہو گیا ہے۔یہ دل اچانک کیسے صاف ہوا، بہت سے لوگوں کو سمجھ نہیں آیا۔ لیکن پھر سینئر سپورٹس صحافی عالیہ رشید نے ایک ٹویٹ کی تو سب واضح ہو گیا۔ جاوید میانداد کا یوں اچانک دل بدل جانے کی وجہ یہ نظر آتی ہے کہ انکے بھانجے فیصل اقبال کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے اپنی ایک ڈومیسٹک ٹیم کا ہیڈ کوچ بنا دیا ہے۔ اس فیصلے نے یکایک جاوید میانداد کو باور کروا دیا کہ انکی گذشتہ ساری تنقید غلط تھی، اور انہوں نے عمران خان کو دل سے معاف کر دیا۔

جاوید میانداد کے بھانجے فیصل اقبال نے پاکستان کیلئے 26 ٹیسٹ کھیلے اور ایک سنچری اور 8 نصف سنچریوں کی مدد سے 26.76 کی اوسط کے ساتھ 1124 رنز کی غیر متاثر کن کارکردگی کے بعد وہ انٹرنیشنل کرکٹ کے میدانوں سے ہمیشہ ہمیشہ کے لئے اوجھل ہو گئے۔ انہوں نے اپنا آخری ٹیسٹ 2010ء میں آسٹریلیا کیخلاف کھیلا تھا۔ ون ڈے انٹرنیشنلز میں فیصل اقبال 2006ء کے کبھی نظر نہ آئے ۔انہوں نے 18 ون ڈے انٹرنیشنلز کی 16 اننگز میں 22.42 کی اوسط سے 314 رنز سکور کیے جبکہ ایک سنچری بھی سکور کر رکھی تھی یعنی باقی 15 باریوں میں انہوں نے محض 214 رنز کا اضافہ کیا ۔ ایک ایسے کھلاڑی کو ڈومیسٹک میں کوچ مقرر کرنے کا فیصلہ کروانے کے لئے جاوید میانداد نے اگر یہ سب کیا تھا تو یہ انتہائی افسوسناک بات ہے۔ قوم کے اتنے بڑے ہیرو سے کسی کو ایسی توقع تو نہیں تھی۔اس پر حتمی رائے دینا تو مشکل ہے کہ حکومت کا اتنے آرام سے بلیک میل ہونا زیادہ حیرت انگیز بات ہے یا جاوید میانداد کا اتنی آسانی سے رام ہو جانا۔ ایک ایسے ملک میں جہاں گذشتہ کئی سال سے کرکٹ کی واپسی ایک معمہ بنا ہوا ہے۔ دنیائے کرکٹ میں پاکستان کا اسوقت عالمی رینک ٹیسٹ میں 7واں، ون ڈے میں چھٹا اور ٹی ٹونٹی میں چوتھا ہے لیکن پی سی بی میں لوگ اس بنیاد پر بھرتی کیے جا رہے ہیں کہ وزیراعظم کے ایک سابق ٹیم ممبر نے ان پر تنقید کی ہے اور انکو رام کرنے کیلئے ان کے بھانجے کو ایک ڈومیسٹک ٹیم کا کوچ بنا دیا گیا ہے ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.